بڑے اسلامی ملک میں کشتی ڈوبنے سے بڑی تعداد میں تارکین وطن لاپتہ

بڑے اسلامی ملک میں کشتی ڈوبنے سے بڑی تعداد میں تارکین وطن لاپتہ

بڑے اسلامی ملک میں کشتی ڈوبنے سے بڑی تعداد میں تارکین وطن لاپتہ 04 جولائی 2018 (10:15) 10:15 AM, July 04, 2018

لیبیا میں بحریہ نے ایک اعلان میں بتایا ہے کہ اتوار کے روز لیبیا کے ساحل کے نزدیک ڈوب جانے والی کشتی کے 41 غیر قانونی تارکین وطن کو بچا لیا گیا ہے جب کہ 63 افراد ابھی تک لا پتہ ہیں۔

ضرور پڑھیں:سعودی عرب نے تیل کی اضافی پیداواری صلاحیت کو بروئے کار لانے پر آمادگی ظاہر کردی

ضرور پڑھیں:سعودی عرب نے تیل کی اضافی پیداواری صلاحیت کو بروئے کار لانے پر آمادگی ظاہر کردی

لیبیا کی بحریہ کے ترجمان میجر جنرل ایوب قاسم کے مطابق جن 41 افراد کو بچایا گیا انہوں نے لائف جیکٹ پہن رکھی تھی۔ بچ جانے والوں نے بتایا ہے کہ دارالحکومت طرابلس سے 50 تقریبا کلو میٹر مشرق میں ڈوبنے والی کشتی میں کُل 104 افراد سوار تھے۔ترجمان نے بتایا کہ مذکورہ افراد کے علاوہ پیر کے روز لیبیا کی بحریہ کا ایک جہاز طرابلس پہنچا جس پر 235 مہاجرین سوار تھے۔ ان افراد کو اسی علاقے میں دو مختلف آپریشنز میں بچایا گیا تھا۔ بچ جانے والوں میں 54 بچے اور 29 عورتیں ہیں۔کشتی ڈوب جانے کے تازہ واقعے کے بعد اب جمعے سے اتوار کے درمیان بحیرہ روم میں لاپتہ ہونے والے مہاجرین کی مجموعی تعداد 170 ہو چکی ہے۔

متعلقہ خبریں