کیا ملک اس قابل ہے کہ ایک گھر میں 7بچے پیدا ہوں؟ہم کس چکرمیں پھنس گئے ہیں کہ بچے کم پیدا کرنا اسلام ۔۔۔۔۔۔۔۔،چیف جسٹس کی سربراہی میںبڑھتی آبادی سے متعلق کیس کی سماعت

کیا ملک اس قابل ہے کہ ایک گھر میں 7بچے پیدا ہوں؟ہم کس چکرمیں پھنس گئے ہیں کہ بچے کم پیدا کرنا اسلام ۔۔۔۔۔۔۔۔،چیف جسٹس کی سربراہی میںبڑھتی آبادی سے متعلق کیس کی سماعت

کیا ملک اس قابل ہے کہ ایک گھر میں 7بچے پیدا ہوں؟ہم کس چکرمیں پھنس گئے ہیں کہ ... 04 جولائی 2018 (00:48) 12:48 AM, July 04, 2018

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں بڑھتی آبادی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ سماعت کے دوران ریمارکس دیئے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک میں آبادی تیزی کے ساتھ بڑھ رہی ہے ، کیا ملک اس قابل ہے کہ ایک گھر میں 7بچے پیدا ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ آبادی کی شرح میں اضافہ بم ہے ، وفاقی حکومت نے آبادی کی شرح پرقابو پانے کیلئے اب تک کتنا پیسہ استعمال کیا ؟ ایوب خان دورمیں بھی آبادی کی شرح میں کنٹرول کیلئے پالیسی تھی،ملکی آبادی تیزی سے بڑھ رہی ہے ۔ چیف جسٹس نے کہا کہ ہم کس چکرمیں پھنس گئے ہیں کہ بچے کم پیدا کرنا اسلام کیخلاف ہے ، کیا ملک میں اتنے وسائل ہیں؟

قبل ازیں چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے تین ہفتوں میں ملک بھر میں ایڈز کے مریضوں سے متعلق رپورٹ طلب کرتے ہوئے کہا ہے کہ رپورٹ پیش کرنے میں تاخیر ہوئی تو چاروں صوبوں کے چیف سیکرٹریز ذمہ دار ہوں گے۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں جلالپور جٹاں میں ایڈز کے مریضوں میں اضافے سے متعلق کیس کی سماعت کی ۔

متعلقہ خبریں