ن لیگ اور تحریک انصاف کے درمیان زبر دست تجزیہ ۔پی ٹی آئی کی ترقی کا راز کیا ہے۔پڑھئے اہم حقائق

ن لیگ اور تحریک انصاف کے درمیان زبر دست تجزیہ ۔پی ٹی آئی کی ترقی کا راز کیا ہے۔پڑھئے اہم حقائق

ن لیگ اور تحریک انصاف کے درمیان زبر دست تجزیہ ۔پی ٹی آئی کی ترقی کا راز کیا ... 03 جون 2018 (21:01) 9:01 PM, June 03, 2018

حامد میر کا کہنا ہے کہ :" پی ٹی آئی نسبتاً ایک نئی جماعت ہے ٹھیک ہے96 -1995 میں یہ جماعت بن گئی تھی لیکن اس کی جو سیاسی اٹھان ہے وہ2011کے بعد ہوئی ہے اس طرح اس پارٹی کے سات آٹھ سال ہو گئے ہیں - لیکن مسلم لیگ ن جو ہے اس میں ایک آدمی ہے چودھری نثار علی خان وہ نہ صرف عوامی سطح پر نواز شریف صاحب کو چیلنج کرتے ہیں بلکہ اب انہوں نے شہباز شریف صاحب کے بارے میں بھی بات شروع کر دی ہے اور مسلم لیگ ن کی قیادت ٹس سے مس نہیں ہو رہی ٹھیک ہے آپ نے انہیں پارلیمانی بورڈ میں نہیں ڈالا لیکن وہ ابھی تک پارٹی میں ہیں اور آخری دن جو اجلاس ہوا ہے اس میں آپ دیکھیں شاہد خاقان عباسی صاحب سے بھی ہنس ہنس کے باتیں ہو رہی ہیں اور جو ایم این اے ایم پی ایز ہیں وہ گھیرا ڈال کے بیٹھے ہوئے ہیں چودھری نثار علی کے گرد اور وہ اسی طرح سے اِ ن ہیں ایکٹو ہیں پارٹی میں تو یہ بھی تو دیکھے نا مسلم لیگ ن -ٹھیک ہے ہم تحریک انصاف پہ تنقید کر رہے ہیں اور جائز تنقید کر رہے ہیں لیکن یہ جو چالیس پینتالیس سال پرانی پارٹی ہے اس میں جو چودھری نثار ہیں وہ ابھی تک فیصلہ نہیں کر پا رہے کہ ان کو نکالنا ہے یا رکھنا ہے اور چودھری نثار صاحب نے بھی فیصلہ ابھی تک نہیں کہا کہ وہ آپ کو چھوڑ رہے ہیں یا نہیں چھوڑ رہے انہوں نے آپ کو امتحان میں ڈالا ہوا ہے -آپ دیکھ رہے ہیں کہ قومی اسمبلی میں پرائمنسٹر سے لیکر سیکرٹریز تک اور تو اور صفدر صاحب بھی آکر ان کو سلام کر رہے ہیں اچھی بات ہے بری بات نہیں ہے وہ آپ کے سینیئر ہیں لیکن اس کا مطلب ہے کہ آپ بھی الجھن میں پڑے ہوئے ہیں ایک آدمی جو نواز شریف کو چیلنج کر رہا ہے جو کہہ رہا ہے کہ نواز شریف کی قیادت پارٹی کو تباہی کی طرف لے کر جا رہی ہے -وہ پھر بھی پارٹی کے اندر بیٹھے ہوئے ہیں -عمران خان کی پارٹی میں یہایک بات نظر نہیں آتی -ٹھیک ہے عمران خان اور ان کی پارٹی کی غلطیاں اپنی جگہ پہ ان پہ آپ تنقید کریں میں بھی کرتا ہوں لیکن جو عمران خان کو چیلنج کرے گا وہ پارٹی کے اندر نہیں رہ سکتا -یہ ایک بڑا فرق ہے ن لیگ اور تحریک انصاف میں -اس وجہ سے ن لیگ ایک کمزور فگر پہ ہے چودھری نثار نے نواز شریف کو چیلنج کیا ہوا ہے اور نواز شریف منہ پہ تالا لگا کے بیٹھے ہوئے ہیں -یہ ایک بڑا فرق ہے ن لیگ اور پی ٹی آئی کے درمیان -"

متعلقہ خبریں