انتخابی مہم کی ترمیم کے بارے میں الیکشن کمیشن کا موقف سامنے آ گیا

انتخابی مہم کی ترمیم کے بارے میں الیکشن کمیشن کا موقف سامنے آ گیا

انتخابی مہم کی ترمیم کے بارے میں الیکشن کمیشن کا موقف سامنے آ گیا 03 جون 2018 (17:06) 5:06 PM, June 03, 2018

کنور دلشاد نے کہا ہیکہ جس وقت انتخابی مہم کی ترمیم کے بارے میں سوچا گیا .یہ بڑی تاریخی بات ہے کہ اس بات کی الیکشن کمیشن نے شدید مُخالفت کی ہے .سیکرٹری الیکشن کمیشن بابر فتح یعقوب نے زاہد حامد سے یہ کہا تھا اس وقت تین جماعتیں بیٹھی تھیں اور پی ٹی آئی بھی موجود تھی اور پیپلز پارٹی بھی . ان کے سامنے اُنھوں نے کہا آپ اس میں ترمیم نہ کریں .یہ رولز کاحصہ ہے یہ ترمیم کرنے سے سارا نظام درہم برہم یو جائیگا اور جو کرپٹ لوگ ہوں گے وہ چُھپ جائینگے اُنھیں پکڑا نہیں جا سکے گا .لیکن زاہد حامد نے کہا کہ نہیں ہم اس میں ترمیم کریں گےاور یہ ہماری سیاسی ضرورت ہے یہ کہنے کے ساتھ ساتھ اُنھوں نے تھوڑی سی بدتمیزی بھی کی .جب یہ بات چیف الیکشن کمیشن کے سامنے آئی تو اُنھوں نے باقاعدہ طور پر الیکشن کمیشن کی طرف سے یہ سرکاری خط لکھا کہ " یہ جو آپ کا نومینیشن فارم ہے یہ الیکشن کمیشن نے سبلر کورٹ آف پاکستان کی ہدایات پر لکھا ہے.پانامہ پیپرز کے آنے کے بعد اِنھوں نے یہ سوچا کہ ہماری جتنی بھی غیر مُلکی جائیدادیں ہیں ہم اُن کے اثاثے ظاہر نہ کر پائیں .نواز حکومت انھوں نے اپنے ذاتی اثاثے چُھپانے کیلئے ایسا فارم بنوایا تھا

متعلقہ خبریں