یا اللہ خیر،بلوچستان سے ایف سی کیحوالے سے افسوسناک خبر آ گئی۔

یا اللہ خیر،بلوچستان سے ایف سی کیحوالے سے افسوسناک خبر آ گئی۔

یا اللہ خیر،بلوچستان سے ایف سی کیحوالے سے افسوسناک خبر آ گئی۔ 03 جولائی 2018 (14:06) 2:06 PM, July 03, 2018

بلوچستان کے جنوبی مغر بی ضلع آواران میں فرنٹیر کور بلوچستان کے اہل کاروں کی گشتی پارٹی پر حملے کر کے 6 اہل کاروں کو شہید اور دو کو زخمی کردیا ہے۔

ضرور پڑھیں:آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 12 خطرناک دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کردی۔

ضرور پڑھیں:اس وقت پاکستان 27ہزار ارب روپے کا مقروض ہے جو مسلم لیگ ن کی حکومت ملک پر چڑھا کر گئی ہے،یہ الیکشن ملک کی تقدیر بدل دے گا۔اگلے پانچ دنوں میں پارٹی کا منشور پیش کریں گے ۔عمران خان

ضرور پڑھیں:عمران خان شریف خاندان کے پرانے پیر صاحب کے پاس پہنچ گئے

ضلع آواران کے اسٹنٹ کمشنر حاصل خان نے ٹیلیفون پر وائس اف امر یکہ کو بتایا کہ پیر کو ضلع آواران کی تحصیل مشکے کے علاقے ٹھنک میں فرنٹیر کور بلوچستان کے اہل کاروں کا قافلہ معمول کی گشت پر تھا کہ قریبی پہاڑی علاقے سے نا معلوم مسلح افراد نے قافلے پر جدید اور خود کار ہتھیاروں سے فائرنگ کی اور راکٹ فائر کئے جس سے ایف سی کے چھ اہل کار مو قع پر شہید اور دو زخمی ہو گئے ۔شہیدہونے والے جوانوں کی میتوں اور زخمیوں کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے قر یبی ضلع خضدار کے ایک اسپتال میں منتقل کر دیا گیا جہاں سے بعد میں اُن کی میتوں کو آبائی علاقوں میں روانہ کیا جائے گا ۔تاحال کسی گروپ یا تنظیم کی طرف سے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی ، تاہم اس سے پہلے علاقے میں ہونے والی ایسی کارروائیوں کی ذمہ داری کالعدم بلوچ عسکر ی تنظیم بلوچستان لبر یشن فرنٹ قبول کر تی رہی ہے۔

متعلقہ خبریں