روہنگیا مسلمانوں کیخلاف انسانی حقوق کی منظم انداز میں خلاف ورزیوں کی سب سے خوف ناک کہانیوں میں سے ایک ہے،بلآخر اقوام متحدہ مان گئی

روہنگیا مسلمانوں کیخلاف انسانی حقوق کی منظم انداز میں خلاف ورزیوں کی سب سے خوف ناک کہانیوں میں سے ایک ہے،بلآخر اقوام متحدہ مان گئی

روہنگیا مسلمانوں کیخلاف انسانی حقوق کی منظم انداز میں خلاف ورزیوں کی سب سے ... 03 جولائی 2018 (13:08) 1:08 PM, July 03, 2018

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوٹیریس نے کہا ہے کہ انھوں نے بنگلہ دیش میں مہاجر کیمپوں میں مقیم روہنگیا مسلمانوں سے میانمار میں ہلاکتو ں اور عصمت ریزی کے واقعات کی ناقابل تصور کہانیاں سنی ہیں۔

انتونیو گوٹیریس نے سوموار کو بنگلہ دیش کے سرحدی ضلع کاکس بازار میں میانمار سے سکیورٹی فورسز اور بدھ متوں کے حملوں کے نتیجے میں بے گھر ہونے والے لاکھوں روہنگیا مسلمانوں کے کیمپوں کا دورہ کیا ہے۔اس کے بعد ایک ٹویٹ میں انھوں نے کہا ہے کہ ’’ روہنگیا مسلمان صرف انصاف اور گھروں کو محفوظ واپسی چاہتے ہیں‘‘۔

ضرور پڑھیں:لڑکی نے میٹرو ٹرین کے سامنے کود کر خود کشی کرلی۔

ضرور پڑھیں:امریکا نے ایک القاعدہ کے ایک مبینہ حامی کو گرفتار کر لیا،لیکن الزام ایسا لگایا کہ سچ ہو جاتا تو۔۔۔۔۔امریکی سوچ کر بھی تھر تھر کا نپنے لگیں۔

ضرور پڑھیں:ایک ڈرائیور ڈرائیونگ کے دوران ویڈیو بنا رہا تھا کہ اچانک شدید حادثہ ہو گیا،لیکن اسکے بعد جو کچھ ہوا دنیا اس پر حیران ہو گئی۔

انھو ں نے بعد میں ایک نیوز کانفرنس میں کہا کہ میانمار میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کے بعد نقل مکانی کرکے آنے والے روہنگیا مسلمان خوف ناک صورت حال میں رہ رہے ہیں۔انھوں نے ان مہاجرین سے فراخدلانہ سلوک پر بنگلہ دیش کی حکومت کو سراہا اور کہا کہ ’’دل پسیجے بغیر ا ن کیمپوں کا دورہ ناممکن ہے۔یہ انسانی حقوق کی منظم انداز میں خلاف ورزیوں کی سب سے خوف ناک کہانیوں میں سے ایک ہے‘‘۔

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کا کہنا تھا کہ عالمی برادری روہنگیا مسلمانوں سے یک جہتی کا تو اظہار کررہی ہے لیکن ان کی مالی مشکلات اور مصائب کے خاتمے کے لیے امداد کے وعدوں کو عملی جامہ نہیں پہنا رہی ہے۔انھوں نے موسم برسات میں سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے خبردار کیا ہے اور کہا ہے کہ ان سے م

متعلقہ خبریں