فرانس میں دہشتگرد حملے کی سازش،ایرانی سفارتکار سمیت دو ایرانی گرفتار

فرانس میں دہشتگرد حملے کی سازش،ایرانی سفارتکار سمیت دو ایرانی گرفتار

فرانس میں دہشتگرد حملے کی سازش،ایرانی سفارتکار سمیت دو ایرانی گرفتار 03 جولائی 2018 (11:23) 11:23 AM, July 03, 2018

بیلجیئم کے فیڈرل پراسیکیوٹر نے فرانس کے دارالحکومت پیرس میں ایرانی حزبِ اختلاف کی کانفرنس کے دوران دہشت گردی کے حملے کی سازش کے الزام میں تحقیقات کا آغاز کردیا ہے اور اس کی اطلاع پر جرمنی میں ایک ایرانی سفارت کار کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ذرائع نے اس کی شناخت اسداللہ اسدی کے نام سے کی ہے۔

ضرور پڑھیں:اسرائیلی فوج کے ٹینک اور توپ خانے شام کی سرحد کے قریب نصب

ضرور پڑھیں:خود کش بمبار نے سکھوں اور ہندوؤں کے قافلے میں تباہی مچادی،لاشوں کے ڈھیر لگ گئے۔

ضرور پڑھیں:بے گھر روھینگیا مسلمانوں کی گھر واپسی ممکن نہیں،انسانی حقوق کے بین الاقوامی گروپ کا انتبا جاری

ضرور پڑھیں:امریکہ کو ایک اور جگہ رسوائی کا سامنا،اقوام متحدہ کے انتخابات میں بدترین شکست

بیلجیئم کی اسٹیٹ سکیورٹی ایجنسی نے پیرس میں قومی کونسل برائے مزاحمتِ ایران کی سالانہ کانفرنس کے موقع پر ہفتے کے روز دہشت گردی کے اس حملے کی سازش کا سراغ لگایا تھا،بیلجیئن سکیورٹی حکام نے ملک کےشمالی علاقے آنٹورپ سے ایک مشتبہ ایرانی نژاد بیلجیئن جوڑے کو گرفتار کر لیا ہے۔اس ایرانی مرد انیس ایس (1980ء) اور نسیمہ این ( 1984ء) پر ہفتے کے روز قومی کونسل برائے مزاحمت ِ ایران کی سالانہ کانفرنس کے دوران انتہا پسند بم حملے کی منصوبہ بندی میں ملوث ہونے کا شُبہ ہے۔پراسیکیوٹرز نے اس جوڑے کے بارے میں کہا ہے کہ وہ ایرانی نژاد ہیں او ر ان کے قبضے سے پانچ سو گرام ( قریباً ایک پاؤنڈ) وزنی انتہائی دھماکا خیز مواد ٹی اے ٹی پی اور ایک ڈیٹونیٹر ڈیوائس برآمد ہوئی تھی۔ایک اطلاع کے مطابق انھیں پولیس کے ایک ایلیٹ اسکواڈ نے برسلز کے ایک اقامتی علاقے میں کہیں جاتے ہوئے روکا تھا اور دھماکا خیز مواد برآمد ہونے پر گرفتار کر لیا تھا۔

متعلقہ خبریں