چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے پنجاب کی جیلوں میں کرپشن کا نوٹس لے لیا

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے پنجاب کی جیلوں میں کرپشن کا نوٹس لے لیا

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے پنجاب کی جیلوں میں کرپشن کا نوٹس لے لیا 02 جولائی 2018 (21:46) 9:46 PM, July 02, 2018

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے پنجاب کی جیلوں میں کرپشن کا نوٹس لے لیا ہے - چیف جسٹس نے یہ نوٹس جیل اہلکار کی درخواست پر لیا ہے - چیف جسٹس ثاقب نثار نے روالپنڈی کے ہسپتالوں کا دورہ کیا ہے -

ضرور پڑھیں:جب سے پاکستان بنا ہے پہلی دفعہ کسی نے ہاتھ ڈالا ہے پنجاب کی بیوروکریسی پہ، پنجاب کی بیوروکریسی مکھن سے بال کی طرح نکلی اور پھر ق لیگ بنی اور ن لیگ میں سے سارے لوٹے۔۔۔۔۔اب کیا ہونیوالا ہے،پڑھئے مزیدار حقائق

ضرور پڑھیں:مسلم لیگ (ن) نے تحریکِ انصاف کی اہم وکٹ گر ا دی

ضرور پڑھیں:بلاول بھٹو زرداری پر پتھراؤ کرنے والوں کو سوال کا حق تھا لیکن ۔۔۔۔۔۔۔ایم کیو ایم سے بڑی آواز بلند

اور دونوں ہسپتالوں میں ان کے سامنے دو پولیس اہلکار جعفر اور ناظم پیش ہوئے ہیں ان دونوں نے چیف جسٹس کو حلف لے کر بتایا ہے کہ ان کے جیل کے سابق آئی جی میاں فاروق نذیر اور سابق سپریڈینٹڈ چودھری مشتاق نے جیلوں میں کرپشن کا بازارگرم کیا ہے اور ان کی کرپشن کے خلاف آواز اٹھانے پر ان پر نہ صرف قاتلانہ حملے کیے گئے ہیں بلکہ ہائی کورٹ میں جو کرپشن کی انکوائری ہے وہ بھی سرد خانے میں ڈالی گئیں - دونوں اہلکاروں کا کہنا ہے کہ ان دونوں پولیس افسران کی سرپرستی نواز شریف کرتے رہے ہیں اس لیے کبھی ان کا تبادلہ نہیں ہوا - چیف جسٹس نے دونوں اہلکاروں کی پوری بات سننے کے بعد پنجاب کی جیلوں میں ہونی والی کرپشن کا باقاعدہ نوٹس لیا ہے -

متعلقہ خبریں