میزیں کھانا کھانے کیلئے ہوتی ہیں لیکن جاپان میں میزیں الٹنے کو کھیل بنا لیا گیا ہے،جاپانی ایسا کیوں کرتے ہیں،وجہ انتہائی دلچسپ

میزیں کھانا کھانے کیلئے ہوتی ہیں لیکن جاپان میں میزیں الٹنے کو کھیل بنا لیا گیا ہے،جاپانی ایسا کیوں کرتے ہیں،وجہ انتہائی دلچسپ

میزیں کھانا کھانے کیلئے ہوتی ہیں لیکن جاپان میں میزیں الٹنے کو کھیل بنا لیا ... 02 جولائی 2018 (14:41) 2:41 PM, July 02, 2018

16 جون کو جاپان کے اواتا پریفیکچر کے ایک شاپنگ مال نے بارہواں سالانہ عالمی چبودائی-گائیشی ٹورنامنٹ منعقد کیا جس میں حصہ لینے والے افراد چائے کی میز کو الٹا کر اس پر رکھے کھانے کو دور پھینکتے ۔اس طریقہ کار سے بہت سے لوگ اپنے اندر کا غصہ اور فرسٹریشن مختلف قسم کے جملے کہتے ہوئے نکالتے ہیں جیسے کہ "مجھے نوکری چاہیے"، یا "میری تنخواہ بڑھاؤ" وغیرہ۔

ضرور پڑھیں:بھارتی جوہریوں نے 6690 ہیروں سے انگوٹھی بنا کر نیا عالمی ریکارڈ بنا لیا۔قیمت اتنی کہ دنیا حیران

ضرور پڑھیں:جب میگن میرکل نے اپنے شوہر شہزادہ ہیری کے ہاتھ کو چھونے کی کوشش کی تو برطانیہ میں بھونچال آ گیا ،مگر ایسا کیوں ہوا وجہ جانکر آپ بھی سر پکڑ کر بیٹھ جائیں گے۔

ضرور پڑھیں:جینز پہننے سے منع کیوں کیا؟ ایک عورت نے اس کی چار بیٹیوں کیساتھ ملکر شوہر کیساتھ وہ کر ڈالا کہ انسانیت شرما جائے

ذرائع کیمطابقاس کھیل کے ضوابط بہت سادہ سے ہیں : کوئی شخص بھی اس مقابلے میں حصہ لے سکتا ہے چاہے وہ بچہ ہو یا بڑا اور اس نے صرف لکڑی کی بنی چھوٹی سی چائے والی میز کو پورا زور لگا کر الٹانا ہوتا ہے تاکہ اس پہ رکھی ہوئی کھانے پینے کی نقلی اشیاء جتنا اونچا اچھل سکتی ہیں ، اچھلیں۔ درحقیقت اس کھیل میں جیتنے والے کا تعین اس بات سے نہیں کیا جاتا کہ اس نے کتنی بار میز کو الٹایا ہے بلکہ اس بات سے کیا جاتا ہے کہ میز پر رکھی پلاسٹک کی نقلی مچھلی کتنا دور تک جاتی ہے۔مقابلے میں حصہ لینے والے چھوٹی سی چائے والی میز کے پیچھے گھٹنوں کے بل بیٹھ جاتے ہیں ۔ ان کے ساتھ ایک خانساماں کا لباس پہنے خاتون کھڑی کر دی جاتی ہے اور جیسے ہی وہ ان کے کندھے کو ہاتھ لگا کر کہتی ہے "Stop it" ، اسی وقت وہ میز کو پوری قوت سے اچھالتے ہیں ۔

متعلقہ خبریں