سولہ بیوروکریٹس تھے جنھوں نے مجموعی طور پر یہ سودا کیا تھا کہ ہم مُلک پاکستان کے نہیں بلکہ سیاستدان کے وفادار ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔اوریا مقبول جان نے ناصر کھوسہ کی اصلیت بتا دی۔

سولہ بیوروکریٹس تھے جنھوں نے مجموعی طور پر یہ سودا کیا تھا کہ ہم مُلک پاکستان کے نہیں بلکہ سیاستدان کے وفادار ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔اوریا مقبول جان نے ناصر کھوسہ کی اصلیت بتا دی۔

سولہ بیوروکریٹس تھے جنھوں نے مجموعی طور پر یہ سودا کیا تھا کہ ہم مُلک ... 01 جون 2018 (15:04) 3:04 PM, June 01, 2018

معروف تجزیہ نگار اوریا مقبول جان نے کہا ہیکہ"عمران خان ناصر کھوسہ کے نام پر طویل عرصے سے مشورے کر رہے تھے .2012 میں آصف علی زرادی کے بہنوئی فضل اللہ تھے پروموشن میں اُن کا نمبر 140 تھا ,21 سے 20 دن حتمی فیصلے کیلئے ہوتے ہیں .پرومشن کیلئے چار چیف سیکٹری چُنے جاتے ہیں چار آئی جی ہوتے ہیں اور چھ فیڈرل ایم پی اے ہوتے ہیں .یہ تقریباّ پندرہ سے سولہ لوگ پورا مُلک چلاتے ہیں . آصف علی زرداری کے دورِ حکومت میں اُنھوں نے فیصلہ کیا کہ چند لوگوں کو پروموٹ کر دیتے ہیں . 50 لوگوں کو جو پہلے مُسحق تھے اُنھیں چھوڑ کر آخری نمبر والے آصف علی زرداری کے بہنوئی کو پروموٹ کر دیا گیا اور باقی بھی ایسے ہی لوگوں کو چُنا گیا .

اِن کے خلاف میں سُپریم کورٹ میں گیا اور ان کے خلاف میں نے مُقدمہ درج کروایا وہاں جا کر میں نے یہ کہا کہ ان سارے بیوروکریٹس میں سے کوئی ایک بھی اس قابل ہوتا کہ جو صرف اختلافی نوٹ بھی لکھ لیتا تو میں ان بیوروکریٹس کے مُسقبل سے مایوس نہ ہوتا .یہ سولہ کے سولہ بیوروکریٹس تھے جنھوں نے مجموعی طور پر یہ سودا کیا تھا کہ ہم مُلک پاکستان کے نہیں بلکہ سیاستدان کے وفادار ہیں .اُن میں سے ایک ناصر کھوسہ بھی تھے جو سیکرٹری پنجاب تھے.اس وقت مسئلہ یہ ہے کہ عمران خان کو کوئی بات سمجھ نہیں آرہی .پچھلے 30 سے 40 سال میں بیوروکریسی اور عدلیہ نواز شریف اور باقی حُکومتوں نے تباہ کر کے رکھ دی ہے .اب عمران خان بیوروکریٹس کہاں سے ڈھونڈ کر لائیں جس بیوروکریسی میں سارے کے سارے بیوروکریٹس ہی ایسے ہوں عمران خان خُود پریشان ہیں ۔"

متعلقہ خبریں